Home » اور وقت کے غدار ہیں رستم ٹھہرے….! ۔ شفا ہما
پاکستان

اور وقت کے غدار ہیں رستم ٹھہرے….! ۔ شفا ہما

ستارے گر بتادیتے سفر کتنا کٹھن ہوگا…
پیالے شہد کے پیتے تلخ ایام سے پہلے…

سولہ دسمبر…! قربانیوں اور سازشوں… بے ضمیر اور بزدل دلوں کی ایک طویل داستان….!

سقوطِ ڈھاکہ محض اتنی سی بات نہیں تھی کہ اس دن پاکستان کے ایک ٹکڑے میں مقیم افراد نے کہا کہ وہ پاکستان کے ساتھ نہیں رہنا چاہتے اور ایک نیا ملک سامنے آگیا.. بلکہ یہ تو.. سازشوں… الزامات.. اور خون سے تتر بتر ایک ایسی داستان ہے کہ اس بارے میں جتنا سوچیں حیرت سے زیادہ شرم محسوس ہوتی ہے…

سولہ دسمبر غیروں کی چالبازیوں سے زیادہ اپنوں کی بے التفاتی کی داستان ہے…! وہ لوگ جنہوں نے پاک وطن کے لیے اپنا سب کچھ داؤ پر لگا دیا.. یہ جانتے ہوئے بھی کہ پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے کی قیمت کیا ہوگی… اور انہوں نے صرف یہ نعرہ نہیں لگایا بلکہ اسکی بھرپور قیمت بھی ادا کی… اپنی جان سے بھی… اپنی املاک سے بھی… اپنی عزت و آبرو سے بھی… مگر سکون کے ساتھ جنگ سے دور بسنے والے پاکستانیوں نے ان کے ساتھ جو سلوک کیا.. کہ وہ اپنے ہی وطن میں اجنبی ٹھہرے… وطن کی محبت گالی ٹھہری… وہ آج بھی پھانسی چڑھائے جارہے ہیں.. ان کی نسلیں آج بھی معیوب ہیں.. اور جن کے لیے سب قربانیاں دی گئیں.. وہ کل بھی سکون سے تھے اور آج بھی خواب آور نیند میں مدہوش ہیں…

اے وطن… تیرے محسن ہی مجرم ہیں یہاں..
اور وقت کے غدار ہیں رستم ٹھہرے….!

سولہ دسمبر محض ایک دن نہیں.. ایک تاریخ ہے.. ایک رستا ناسور ہے… ایسا دن جو ہر سال اپنے دامن میں بہت سی قربانیاں سمیٹ کر آگے بڑھ جاتا ہے… سالہ دسمبر سسکنے اور سلگنے کا موسم ہے….! یہ دن بہت سے بے ضمیر دلوں کی بے ضمیری کا گواہ بھی ہے… اور بہت سے غیرت مند دلوں کی جراتوں کا گواہ بھی… اس دن نے معصوم جذبوں کو خون میں ڈبکیاں لگاتے بھی دیکھا…
اس دن نے پاکستان سے محبت کرنے والوں کو پھانسی چڑھتے بھی دیکھا…. اور یہی دن ننھے بچوں پر انسانیت سوز مظالم کا گواہ بھی بن گیا…

اسی دن نے ننھے پھولوں کو قبروں میں اترتے بھی دیکھا… کاش کہ مداوا ہوسکے… کاش کہ ہم اب جاگ جائیں… کاش کہ ہم اب اسلام کے کھوکھلے ہوتے قلعہ کے محافظ بن جائیں…! خارزاروں کو کسی آبلہ پا کی ہے تلاش.. وادئی گل سے ببولوں کا خریدار آئے… ریگ زاروں میں کوئی تشنہ دہن آجائے… ہوش والوں! کوئی تلقین جنوں فرمائے…!

درد میں سانجھی ساتھ نہیں

درد میں سانجھی ساتھ نہیں آنکھوں میں ویرانی تھی دل بھی میرا شانت نہیں اجلے دن میں نا کھیلی تھی گھور اندھیری رات میں بھی حصہ میں جس کے آتی تھی وہ شاہ میں گدا کہلاتی تھی آنسو پی کے جیتی تھی ذلت کا نشانہ بنتی تھی یا خاک میں زندہ رلتی تھی ہرس و ہوس کا سمبل تھی یا اینٹوں میں چن دی جاتی تھی چند ٹکوں میں بکتی تھی آہ میری بے مایہ تھی سوکھے لبوں پہ مچلتی تھی

威而鋼

以前服用威而鋼,但有效時間僅僅只有4小時,對於在常年在高原的我來說,時間有點太短,所以會考慮犀利士。

  • 犀利士(Cialis),學名他達拉非

犀利士購買

與其他五花八門的壯陽技巧相比,犀利士能在40分鐘內解決性功能勃起障礙問題,並藥效持續36小時。這效果只有犀利士能做到,因為醫療級手術複雜,不可逆,存在安全隱患;植入假體和壓力泵等,使用不便,且有病變的可能。