پاکستان

یوم پاکستان! ساجدہ پروین

اللہ کرے میرے وطن میں ایسا کمال ہو
یہ ارض پاک حرمین کی مثال ہو
یہاں ہر مسجد امن کا ٹھکانہ ہو
کوئی نہ کبھی بھی ظلم کا نشانہ ہو

یہاں صبحیں سدا بیدار رہیں
مقاصد سب پہ آشکار رہیں
اس کی دھوپ کبھی نہ جھلسائے
بڑے ٹھنڈے ہوں درختوں کے سائے
یہاں شامیں بڑی روپہلی ہوں
اور رنگینیاں ہر سو پھیلی ہوں
یہاں راتیں دلہن جیسی سنورتی ہوں
اور راحت لے کر اترتی ہوں
یہاں نیندیں با مقصد خوابوں بھری ہوں
اور تعبیریں ہاتھ باندھے کھڑی ہوں

یہاں پنجرے سارے ٹوٹے ہوں
اور جھگڑے سارے روٹھے ہوں
یہاں پنچھی ہر سو چہچہاتے رہیں
اور امن کے گیت سناتے رہیں
یہاں سڑکیں ساری آباد رہیں
اور چلنے والے سدا شاد رہیں
یہاں آسیں کبھی نہ ٹوٹیں
اور امیدیں کسی کی نہ روٹھیں
یہاں عزتیں سب کو راس رہیں
اور بچے ماؤں کے پاس رہیں

اللہ کرے ہریالی خوب لہکتی ہو
پھولوں کی خوشبو ہر سو مہکتی ہو
دکھوں کو یہاں جھانکنے کی مجال نہ ہو
ہر عمل خوب ہو، کبھی اس پر ملال نہ ہو
ہر سو علم کا نور رہے
اور لاگو یہاں دین کا دستور رہے
صحت کا رس گھولیں فضائیں سانسوں میں
کبھی نہ دھول اتاریں ہوائیں سانسوں میں
یہاں پیر و جواں سب مربوط رہیں
رشتے رابطے سب مضبوط رہیں

عورتوں کی ردائیں قائم رہیں
مردوں کے فخر سدا دائم رہیں
منصف ہوں یہاں کے امیر سارے
کیے پہ نادم ہوں اسیر سارے
اللہ کرے میرے وطن میں ایسا کمال ہو
یہ ارض پاک حرمین کی مثال ہو
اللہ کرے

Add Comment

Click here to post a comment