ڈینیئل پرل قتل کیس: ملزمان کی رہائی روک دی گئی




کراچی: محکمہ داخلہ سندھ نے امریکی صحافی ڈینیئل پرل قتل کیس میں نامزد ملزمان کی رہائی روک دی ہے۔

ذرائع کے مطابق سندھ حکومت سپریم کورٹ سے رجوع کرنے پرغور رہی ہے اور کل تک سپریم کورٹ میں اپیل دائر کر دی جائے گی۔

محکمہ پراسیکیوشن ذرائع کے مطابق سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کا جائزہ لیا جا رہا ہے جس کے بعد سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا۔

سندھ ہائی کورٹ نے2 اپریل2020 کو امریکی صحافی کے قتل میں نامزد تین ملزمان کی رہائی کا حکم دیا تھا اور ایک ملزم احمد عمر شیخ کی سزائے موت کو 7 سال قید میں تبدیل کیا تھا۔

امریکی صحافی ڈینئیل پرل کو سال 2002 میں کراچی سے اغوا کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے مجرم احمد عمر شیخ کو سزائے موت اور 3 مجرموں فہد نسیم، شیخ عادل اور سلمان ثاقب کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

استغاثہ کی جانب سے مجرموں کی سزاؤں میں اضافے کے لیے بھی درخواست دائر کی گئی تھی۔ سندھ ہائی کورٹ کے دو رکنی بینچ نے 6 مارچ2020 کو حتمی دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

The post ڈینیئل پرل قتل کیس: ملزمان کی رہائی روک دی گئی appeared first on ہم نیوز.

اپنا تبصرہ بھیجیں