کوروناوائرس جنگ عظیم کے بعد دوسرا بڑا چیلنج، شاہ محمود




اسلام آباد: پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس جنگ عظم کے بعد دوسرا بڑا چیلنج ہے۔

وزیر خارجہ نےاقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیوگوئترس کے ساتھ ٹیلیفونک رابطہ کیا اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

شاہ محمود نے انتونیوگوئترس سے درخواست کی کہ ترقی پذیر ممالک کے قرضوں کی ری اسٹرکچرنگ کے لئے کردار ادا کریں۔

پاکستان کے وزیرخارجہ نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے متعلق پاکستان کی تشویش سے آگاہ کیا۔

انتونیوگوئترس کو بتایا کہ بھارت نئے ڈومیسائل قوانین کے ذریعے مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی تناسب تبدیل کرنے کے درپے ہے۔ اقوام متحدہ اور عالمی برادری بھارت کو روکنے کےلیے اپنا کردار ادا کرے۔

پاکستان کے وزیرخارجہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ادویات پہنچائی جائیں اور وہاں سے فوراً کرفیو ہٹایاجائے۔

شاہ محمود قریشی نے کووڈ 19ریسپانس اینڈ ریکوری فنڈ کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ  ترقی پذیر ممالک کے قرضوں کی ری اسٹرکچرنگ کے لئے کردار ادا کریں۔

وزیرخارجہ نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل وبا سے نمٹنے کے لیے حمایت کا یقین دلایا۔

بیرون ملک پھنسے پاکستانیوں کو واپس لانے کے متعلق ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ تھائی لینڈ میں پھنسے لوگ ہم سے رابطہ کرتے تو زیادہ آسانی ہوتی۔

بیرون ملک پاکستانیوں کو وطن واپس لانے کی کوشش کررہے ہیں لیکن تین یا چار لوگوں کے لیے پرواز بھیجنا مشکل کام ہے۔ بیرون ملک سے لائے گئے لوگوں کی اسکریننگ بھی کرنی ہے۔

The post کوروناوائرس جنگ عظیم کے بعد دوسرا بڑا چیلنج، شاہ محمود appeared first on ہم نیوز.

اپنا تبصرہ بھیجیں