15 ہزار مسافروں کو 38 ممالک سے واپس لاچکے ہیں، معید یوسف




اسلام آباد: وزیراعظم کے معاون خصوصی معید یوسف نے کہا ہے کہ  15 ہزار مسافروں کو 38 ممالک سے واپس لاچکے ہیں جبکہ ایک لاکھ پاکستانی وطن واپس آنے کے خواہشمند ہیں۔

کورونا کے حوالے سے میڈیا بریفینگ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ خلیجی ممالک میں پھنسے مزدور اور دیہاڑی دار افراد کو واپس لارہے ہیں،88 ممالک میں پاکستانی موجود ہیں اوران میں سے بیشتر واپس آنا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب میں 15 ہزار سے زائد پاکستانی موجود ہیں ،خصوصی پرواز چلانے کے لیے متعلقہ ملک کے سفیر سے رابطے ہوتے ہیں۔

معید یوسف نے کہا کہ متعلقہ ملک کے سفیر فیصلہ کرتے ہیں کون خصوصی پرواز کے ذریعے جا سکتے ہیں، وطن واپس آنے والے خواہشمند پاکستانی متعلقہ سفارتخانے کی فہرست میں اپنا نام رجسٹر کراوئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وطن واپس آنے والے مسافروں کو قرنطینہ میں رکھا جاتا ہے، پاکستانیوں کو شفاف طریقے سے وطن واپس لایا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسافروں کو واپسی کےلیے پروٹوکول پرعمل درآمد کرنا ہو گا، دنیا بھر کے ہوائی اڈے اور پروازیں بند ہیں، ہمیں خصوصی پرواز کےلیے متعلقہ ملک سے بات کرنی ہوتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بہت سے ممالک ایسے ہیں جہاں پی آئی اے کو رسائی نہیں ،امریکہ کےلیے جلد پاکستانی خصوصی پرواز شروع ہوجائے گی۔

معید یوسف نے کہا کہ آج سے 10 مئی کے درمیان ہم 30 مزید پروازیں شروع کر رہے ہیں، پاکستانی واپس لانے کےلیے ہم بہترین حکمت عملی سے کام کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خصوصی پروازوں کے لیے مسافر ویب سائٹ سے رہنمائی حاصل کرسکتے ہیں، اس کے علاوہ مسافر دیگر اطلاعات کے ذرائع پر یقین نہ کریں جبکہ پاکستان سٹیزن پورٹل پر کوئی بھی مسافر شکایت درج کرا سکتے ہیں۔

The post 15 ہزار مسافروں کو 38 ممالک سے واپس لاچکے ہیں، معید یوسف appeared first on ہم نیوز.

اپنا تبصرہ بھیجیں