پنجاب میں ایس او پیز کے تحت مزارات کھولنے کا فیصلہ




لاہور: حکومت پنجاب نے محکمہ اوقاف کے زیراہتمام 544مزارات کھولنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے تاہم سماجی فاصلہ برقرار رکھنے کیلئے جاری کیے گئے ایس او پیز پر عمل کرنا لازمی ہوگا۔

داتادرباراور دربار پاکپتن سمیت تمام درباروں کو کھولنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ مزارات پر ایس او پیز کے تحت اقدامات کئے جائیں۔ اس حوالہ سے مزارات کے لئے الگ سے ایس او پیز بنائے جائیں گے جس کے بعد مزارات کو کھولنے کی اجازت دی جائے گی۔

پنجاب کے محکمہ اوقاف نے مزارات پر ڈس انفیکشن ٹنل نصب کررکھی ہیں، جب کہ مزارات پر آنے والوں کو احتیاطی تدابیر پرعمل درآمد کرایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا: پنجاب میں تمام مزارات کی بندش کا فیصلہ

مزارات بند ہونے کی وجہ سے عام شہریوں کو حاضری کی اجازت نہیں ہے جب کہ اوقاف کے زیرانتظام مساجد میں اجتماعات کے انعقاد پر پابندی عائد ہے۔

صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ مارکیٹ اور مساجد میں ایس او پیزاور مقررہ اوقات کی پابندی کرائی جائے گی۔

مزارات کھولنے کے حوالے سے صوبائی وزیر اوقاف و مذہبی امور پنجاب سید سعید الحسن شاہ کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے مزارات بند کئے گئے تھے اب جب کہ حکومت نے لاک ڈاؤن میں نرمی کی ہے تو مزارات کو بھی مخصوص اوقات کے لئے کھولا جاسکتا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اگر حکومت نے جمعۃ الوداع اورنمازعید کے اجتماعات کی اجازت دی تو اس حوالے سے حفاظتی اقدامات اٹھائے جائیں گے۔

واضح رہے کہ پنجاب میں15مارچ2020 کو مزارات بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور لاک ڈاؤن کے دوران مزار بند ہونے سے محکمہ اوقاف پنجاب کو 26 کروڑ کا نقصان ہوا ہے۔

The post پنجاب میں ایس او پیز کے تحت مزارات کھولنے کا فیصلہ appeared first on ہم نیوز.

اپنا تبصرہ بھیجیں