Home » ایک گمنام شہری – صبا حسن
شاعری

ایک گمنام شہری – صبا حسن

اے رب میں سیپ کا وہ موتی بن جاوں.
نظروں سے اوجھل رہوں قیمتی بن جاوں۔
ان موتیوں سے اندھیری نگری میں ہو اجالا۔
چمک سے میری تابناک ھو یہ شہر کراچی۔
خضر کا کام کر جاوں۔
بے خبر ھے آج یہ دنیا۔
سوغات کچھ انمول لے جاوں تیرے پاس۔
دھرنے میں دھرنا دینے روز
پہنچتا ہوں ۔
تنگ ہے اہل کراچی اس کالے قانون سے۔
روشنی کے لئے میں بھی اپنا دیہ روز جلاتا ہوں۔
نظروں سے اوجھل ھوں آج میڈیا کے نظر کرم سے
دعا ہے ،پہنچ کر تیرے حضور سرخرو ہو جاوں ۔

Add Comment

Click here to post a comment