Home » کیا آپ کو بھی قرضوں نے گھر رکھا ہے ؟
Uncategorized

کیا آپ کو بھی قرضوں نے گھر رکھا ہے ؟

ایک روز آپ صلی اللہ علیہ وسلم  مسجد میں تشریف لائے تو حضرت ابوامامہؓ مسجد میں تشریف فرما تھے آپ صلی اللہ علیہ وسلم  نے حضرت ابوامامہؓ سے پوچھا کہ نماز کے وقت کے علاوہ مسجد میں موجود ہونے کی کیا وجہ ہے ؟ 

حضرت ابوامامہؓ نے کہاکہ غم اور قرضوں نے گھیر رکھا ہے۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا : کیا میں نے تمہیں ایک دعا نہیں سکھائی کہ جس کی برکت سے اللہ تعالیٰ تیرے غموں کو دور کرے گا اور تمہارے قرضوں کی ادائیگی کے انتظام فرمائے گا؟ حضرت ابوامامہؓ نے کہا : کیوں نہیں، اے اللہ کے رسول! آپ صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: اے ابوامامہؓ ! اس دعا کو صبح وشام پڑھا کرو۔ وہ دعا یہ ہے:اَللّٰهمَّ اِنِّی اَعُوْذُ بِکَ مِنَ الْهمِّ وَالْحُزْنِ، وَاَعُوْذُ بِکَ مِنَ الْعَجْزِ وَالْکَسْلِ، وَاَعُوْذُ بِکَ مِنَ الْجُبْنِ وَالْبُخْلِ، وَاَعُوْذُ بِکَ مِنْ غَلَبَة الدَّينِ وَقَهرِ الرِّجَالِحضرت ابوامامہؓ فرماتے ہیں کہ میں نے اس دعا کا اہتمام کیا تواللہ تعالیٰ نے میرے سارے غم دور کردئے اور تمام قرض ادا ہوگئے۔ (ابوداؤد۔ مسلم شریف کی مشہور شرح لکھنے والے امام نووی ؒ نے اپنی کتاب الاذکار میں بھی اس حدیث کو ذکر کیا ہے)قرآن وحدیث میں محتاج لوگوں کی ضرورت پوری کرنے کی ترغیب :بھلائی کے کام کرو تاکہ تم کامیاب ہوجاؤ۔  (سورہ الحج ۷۷)